خزاں اس گلستان میں آتی رہی ہے

Written by Irfan Ali

January 17, 2023

خزاں اس گلستاں میں آتی رہی ہے
ہوا سوکھے پتے اڑاتی رہی ہے
یہاں پھول کھل کے، بہاروں سے مل کے
بچھڑتے رہے، شکوہ نہ کر گلہ نہ کر

یہاں تیرے اشکوں کی قیمت نہیں ہے
رحم کرنا دنیا کی عادت نہیں ہے
کسی نے نہ دیکھا، یہاں خوں کے آنسو
جڑتے رہے، شکوہ نہ کر گلہ نہ کر

You May Also Like…

محبوب کی قربت

محبوب کی قربت

محبوب کی قربت میں اگر کوئی شخص زمین پر جنت کے وجود کا دعوی کرے تو میں اس کے حق میں ہوں...

ہم اور آپ جتنی مرضی نمازیں

ہم اور آپ جتنی مرضی نمازیں

میں اور آپ جتنی مرضی نمازیں پڑھ لیں روزے رکھ لیں تہجد پڑھ لیں لیکن اگر اسی دوران کوئی آپ سے تنگ ہے اور آپ کسی کا دل...

ہم محبت کرنے والے

ہم محبت کرنے والے

ہم محبت کرنے والے بھی عجیب ہوتے ہیں، ایک بندہ ہم نے چن رکھا ہوتا ہے جس کے بغیر ہم جی نہیں سکتے اور اس کے بغیر جیے بھی...

0 Comments

Submit a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *